گلگت بلتستان بھر میں بارشوں نے تباہی مچا دی…. شاہراہ قراقرم مختلف جگہوں پر لینڈ سلائیڈنگ سے بند،

IMG_20170406_165630.jpg

چلاس(شفیع اللہ قریشی) گلگت بلتستان بھر میں بارشوں نے تباہی مچا دی….آئندہ 2 روز تک مزید جم کر بارش ہوگی۔ چلاس شہر اور گردونواح میں گزشتہ دو روز سے بارش کا سلسلہ جاری ہے ۔چلاس تا گلگت شاہراہ قراقرم تتہ پانی ، مولا داد پڑی، کیڈٹ کالج گوہر آباد داس ،جوم پڑی ودیگر مقامات پر لینڈ سلائیڈنگ کے باعث پر بند ۔ گونر فارم کے مقام پر موٹر کار لینڈ سلائیڈنگ کی زد میں آکر سیلابی ریلے میں پھنس کر رہ گئی ۔جبکہ فائبر آپٹک کیبل کے لئے کھودی گئی شاہرات کے کنارے کوہل کے اوپر سے گاڑیوں کو سفر کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے ۔ گینی کے مقام پر مسافر کوچ کو حادثہ پیش آیا جبکہ گونر فارم گیس بونرکے مختلف جگہوں پر دو گاڑیاں مسافر نیٹکو بس اور لینڈ کروزر بارشوں کی وجہ سے شاہراہ قراقرم پر تیز رفتار کے باعث بے قابو ہو کر فائبر آپٹک کے لئے کھودی گئی کوہل میں جا گریں۔ تاہم شاہرات پر مختلف جگہوں پر حادثات پر تمام مسافر محفوظ رہے ۔ ریسکیو 1122 کی ٹیمیں اپنی خدمات سرانجام دینے میں پیش پیش رہی ہے اور مختلف جگہوں پر حادثے کے شکار بننے والی گاڑیوں کو ریسکیو آپریشن کر کے محفوظ مقامات پر منتقل کردیا گیا۔اس قبل بھی فائبر آپٹک کول کی وجہ سے شہر سمیت شاہراہ قراقرم پرحادثات پیش آئی ہے ۔ موسلادھار بارشوں کی وجہ سے دیامر کے تحصیل تانگیر لرک داس میں کمال نامی شخص کے مکان کی چھت گر گئی، چھت گرنے سے ایک خاتون زخمی ہوئی۔گزشتہ سال میں بھی بارشوں،لینڈ سلائیڈنگ اور مٹی کے تودے گرنے سے کئی اموات ہوئی تھی ۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر محمد طارق کی امدادی اداروں اور پولیس کو الرٹ رہنے کے احکامات جاری کر دیا۔ ضلعی انتظامیہ کی ہدایت نامہ میں کہا گیا کہ ڈسٹرکٹ ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی جبکہ عوام کو غیر ضروری سفر سے اجتناب کرنے ،لینڈ سلائیڈنگ والے مقامات سے دور اور محتاط رہنے کی ہدایت کی گئی ہے ۔لینڈ سلا ئیڈنگ اور پتھر گرنے سے استور تا گلگت تک روڈ بند ہو گیا۔جبکہ گلگت تا اسکردو روڈ مکمل بلاک ہوگیاہے ۔ شاہراہ قراقرم مختلف مقامات پر سیلابی ریلے کی نذر، لینڈ سلائیڈنگ سے سینکڑوں مسافر پھنس کر رہ گئے ، چلاس اور گرد ونواح میں موسلا دھار بارشوں کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے ۔بارشوں سے شہر کی تمام سڑکیں تلاب کا منظر پیش کرنے لگاتاہم تلابی سڑکوں پر ٹریفک بھی متاثر ہوئی۔ گزشتہ دو دنوں سے ہونے والی موسلا دھار بارش گلگت بلتستان بھر کے تمام اضلاع میں جاری ہیں، دیامر کے بالائی علاقوں میں بارش اور پہاڑوں پر شدید برفباری کا سلسلہ وقفے وقفے سے جاری ہے جس کی وجہ سے نظام معمولات در ہم ہو کر رہے گیا۔دیامر کے بالائی علاقوں بٹوگاہ ، بابوسر، تھک نیاٹ ،کیھنر،داریل ، تانگیرو دیگر مضافات میں بارش اور پہاڑوں پر برفباری سے موسم میں تبدیلیاں آگئی ہے جس کا سماں جنوری کی طرح سرد ہو گیا، شہریوں نے بھر سے گرم ملبوسات استعمال کرنے لگے ہیں۔محکمہ موسمیات کے مطابق بارشوں کا سلسلہ ائندہ دو روز تک جاری رہے گا….شدید بارشوں کی وجہ سے گلگت بلتستان بھر میں نظام زندگی بری طرح مفلوج ہوکر رہ گئی ہیں…. جی بی ڈی ایم اے کا کہنا ہیں کہ شدید بارشوں کی وجہ سے چلاس تا گلگت شاہراہ قراقرم مختلف جگہوں پر لینڈ سلائیڈنگ سے بند، جبکہ گلگت سکردو روڈ ہر قسم کے ٹریفک کے لئے بند ہوچکی ہیں، اسکردو کھرمنگ روڈ گانھچے روڈ بند ہوچکے ہیں…. جبکہ شاہراہ قراقرم پر بھی شیدید بارش ہورہی ہیں مزید لینڈ سلائیڈنگ کا خدشہ ہے ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s