خواتین کا عالمی دن | زبیدہ یعسوب


1001002.jpgمجموعی طور پر دیکھا جائے ان تمام ہروگرامات میں ایک مخصوص طبقے کی عورت اور اس کے مسائل کو زیر بحث لایا جاتا ہے۔ اور یہ بھی ایک تلخ حقیقت ہے کہ اس طرز کے پروگراموں میں جن خواتین کا ذکر کیا جاتا ہے اوار مثالیں دی جاتی ہیں وہ ایک مخصوص طبقے کی ہوتی ہیں۔ میں نے آج تک اس نوعیت کے جتنے تقریبات کو دیکھا ہے وہاں کسی نے دیہات کے کسی گوشے میں بیٹھی لڑکی کی بات نہیں کی جو زندگی کی سخت اور کٹھن ایام گزارتی ہے اور تلخیوں سے مسلسل لڑتی ہے. کسی نے اس لڑکی کی بات نہیں کی جو غربت اور افلاس کے ہاتھوں مجبور ہوکر سڑکوں پر آنے پر مجبور ہے۔ کسی نے حوا کی ان بیٹیوں کا ذکر نہیں کیا جو کوڈا کرکٹ اور کچرے سے ڈھیر سے روٹی کے ٹکڑے چن چن کے اپنے بچوں اور چھوٹے بہن بھائیوں کا پیٹ پالتی ہے۔ کسی نے اس ماں کی بات نہیں کی جو کسی دور دراز دیہات کے چھوٹے سے گاؤں میں زندگی اور موت کی جنگ لڑتی ہے. جس کے بچوں کا اس بیمار ماں کے علاوہ دنیا میں دوسرا کوئی سہارا نہیں ہے۔ میں ان تمام اداروں اور لوگوں سے یہ دوال پوچھتی ہوں کہ ان غریب خواتین کا تذکرہ کہیں پر بھی کیوں نہیں ہوتا ہے۔ مرکزی دھارے کی معزز اور بااختیار خواتین کا دن تو ہم نے بڑے دھوم دھام سے منا لیا. کھلے دل سے اس دن کی مبارکباد بھی دے دی لیکن غریب اور بے اختیار خواتین کو نہ کسی تقریب میں بلایا جاتا ہے نہ ان کے اعزاز میں کوئی تقریب کا انعقاد ہوتا ہے۔ شاید تقریب کا منتظمین اور خواتین کے حقوق کی بات کرنے والے خود خواتین کے مسائل سے واقف نہیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s