دیامر کے طالبات اپنے روایات مخصوص کلچر،ثقافت اور رسم و ررواج کے اند ر رہتے ہوئے زندگی کے ہر شعبے میں اپنا لوہا منوائیں۔ فیض اللہ فراق

15741246_1151815368272038_4801600360912294757_n.jpgچلاس(بیورورپورٹ) چلاس گرلز ہائی سکول میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی ترجمان گلگت بلتستان حکومت فیض اللہ فراق نے کہا کہ دیامر کے طالبات اپنے روایات مخصوص کلچر،ثقافت اور رسم و ررواج کے اند ر رہتے ہوئے زندگی کے ہر شعبے میں اپنا لوہا منوائیں،گرلز سکول چلاس کے طالبات نے آج اپنی کارکردگی اور صلاحتوں کا عملی مظاہرہ کرتے ہوئے یہ ثابت کر دیا کہ دیامر کی مٹی ذرخیز ہے،اوریہاں کی بچیاں لڑکوں سے بہت آگے ہیں۔انہوں نے کہا کہ مائیں علم و ادب اور تربیت کی درسگاہیں ہوتی ہیں،مائیں وہ جامعات اور کالجز ہیں جہاں سے وہ اپنے بچوں اور بچیوں کو قلم پکڑنے کا سلیقہ سکھاتی ہیں۔مجھے دیامرکی ماوں اور بہنوں پر فخر ہے جنہوں نے اپنے بیٹیوں کو علم کے حصول کیلئے سکول بھیجا اور ان کی بہترین تربیت کی۔مائیں جب اپنے بچوں اور بچیوں کی بہترین تربیت کرتی ہیں تو وہاں سے علم و ادب کی کونپلیں پھوٹنا شروع ہوجاتی ہیں اور تعلیمی،سیاسی،سماجی اورمعاشی انقلاب آجاتا ہے۔ضلع دیامر گلگت بلتستان کا گیٹ وے ہے،اس ضلع کے اندر مرد و خواتین کو زندگی کے مختلف شعبوں میں برابر کے موقع ملنا چاہے۔اسلام مرد اور عورت دونوں کو تعلیم حاصل کرنے کا اجازت دیتا ہے،دینا میں جتنی بھی بڑی بڑی شخصیات گزریں ان کے کامیابی کے پیچھے ایک عورت کا ہاتھ نظر آئیگا۔انہوں نے کہا کہ آج ماں کو اپنا کردار ادا کرنا ہے تاکہ یہ بکھرا ہوا معاشرہ پھر یکجا ہواور ہم نفرتوں کی فصیلیں کھڑی کرنے کی بجائے محبتوں کا درس عام کریں،نفرتوں کو مٹائیں اور محبتوں کو عام کردیں،اور معاشرے کے اندر موجود برائیوں کا خاتمہ کرکے علاقے کو بہترین نتایج اور فائدہ دے سکتی ہیں۔انہوں نے ماوں اور بہنوں کو مخاطب کرتے ہوئے مزید کہا کہ جب گود فاطمہ کو ہوتو امام حسین جنم لیتاہے،جب گود اچھی ماں کو ہوتو عمرفاروق اورعبدالقادر جیلانی جنم لیتا ہے،لیکن جب گھرمیں ماں باپ کی طرف سے تربیت نہ ہوتو دینا کی کوئی یونیورسٹی اُس کونہیں سدھارسکتی ہے،پھر اوبامہ بن جاتا ہے اور بش بن جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ د یامر میں بچیوں کی تعلیم کیلئے ہر فورم پر آواز اُٹھائیں گے اور ان کے تعلیمی مشکلات کو ہنگامی بنیادوں پر حل کر دیا جائیگا۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s