انتظامیہ | وسیم صمد

10013.jpg

سڑک کے درمیان کھڑے ٹریفک داروغَہ نے ہمارا چالان کیا، اُسی جگہ ہماری سنوائی بھی ہوئی اور سزا بھی ملی۔ جب جرمانہ ادا کرنےلگے، تو احساس ہوا ، فاعل ومعفول، دونوں بھینگے ہیں۔ائرپورٹ کو دیکھتے ہوئے ، داروغَہ صاحب نےمجھ سے کہا ،پڑھے لکھے لگتے ہو،نظر کمزور ہے تو گاڑی نہ چلاو، انتظامیہ اب چسُت ہوگئی ہے۔
جناب چست کا تو پتہ نہیں، گلگت بلتستان کی حکومت اورانتظامیہ بھینگی ضرور ہوگئی ہے۔ اقتصادی راہداری کا منصوبہ گللگت بلتستان سے گزرتا ہے اور ہماری حکومت کی نگاہیں وفاق پر ۔ جشن آزادی گللگت بلتستان کے ہیرو یہاں تھے اور رقص اسلام آباد میں ہوا۔تین ماہ میں قانون ساز اسمبلی کی عمارت بنی ،تو سب کو دیکھائی دی لیکن سالوں سے سینکڑوں زِیرتعمیر بجلی گھر، سڑکیں اور پل کسی کو نظر نہیں آتے۔ بینظیر کارڈ برکولتی میں ہیں اور اے ٹی ایم مشین خنجراب میں ۔شمسی توانائی کے قمقمے ویران پارکوںکو روشن کررہے ہیں اور سرکاری سکول اندھیروں میں ہیں۔ صفائی سڑکوں کی ہورہی ہے اور گندگی سرکاری محکموں میں ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s