اسکردو، کواردو علی آباد کے سیلاب متاثرین اب تک غیر محفوظ مقام پر خیمہ بستی میں زندگی گزارنے پر مجبور

سکردو (رجب علی قمر) کواردو علی آباد کے سیلاب متاثرین اب بھی غیر محفوظ مقام پر خیمہ بستی میں زندگی گزارنے پر مجبور، کسی بھی وقت انسانی جانیں سیلاب کی وجہ سے ضائع ہوسکتی ہیں۔ گزشتہ دنوں تباہ کن سیلاب کی زد میں آنے والے 14 گھرانوں کے مکینوں کی رہائش کا انتظام اب تک نہیں کیا جاسکا ہے۔ متاثرین کے لیے خیمے بھی غیر محفوظ مقام پر لگائے گئے ہیں۔ حکام کی جانب سے محفوظ مقام پر منتقل کرنے کا کوئی اقدامات نہیں کیے گئے ہیں۔ حکو متی امداد کے منتظر سیلاب متاثرین میڈیا کے سامنے دھائی کرتے رہے۔ اردو علی آباد کے سیلاب متاثرین کے نمائندہ سرکردگان حاجی یعقوب،محمد علی،محمد حسین،حاجی محمد حسن و دیگر نے کہا کہ ہمیں انتظامیہ کی جانب سے فی الحال خوراک فراہم کی گئی ہے جو کہ ناکافی ہے ہمارے 14 سے زائد مکانات سیلاب کے ملبے تلے دب گئے ہیں لیکن سر چھپانے کے لئے صرف خیمے لگائے گئے ہیں جس مقام پر خیمہ بستی لگایا گیا ہے وہ غیر محفوظ ہیں ہماری ساری زندگی کی کمائی اور جمع پونجی سیلاب کی نذر ہوگئی ہے اب ہمارا کوئی نہیں پچا ہے صرف ہماری جانیں زندہ ہے لیکن ہمارے پاس متبادل کپڑے بھی نہیں ہے جو کہ ہم تبدیل کرسکیں اس قدر لاچار اور بے آسرا حالت میں حکومتی امداد کے منتظر ہیں سیلاب متاثرین نے کہا کہ حکومت فوری طور پر علی آباد کواردو کو آفت ذدہ قرار دے کر ہمیں محفوظ مقام پر منتقل کریں کیونکہ یہا ں ہمیشہ سیلاب کا خطرہ رہتا ہے ہمارے بچوں کی تعلیم سے لے کر زندگی کے تمام معاملات مکمل طو رپر تباہ و برباد ہوچکے ہیں حکام بالا جلد ہماری داد رسی کریں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s