صدر ممنون حسین کا دورہ بلتستان : پرامن خطے سیکیوریٹی کے نام پر کروڑوں روپے خرچ

Sadar PK.jpg

سکردو ( رجب علی قمر ) صدر پاکستان ممنون حسین کے حالیہ دورے کے دوران سرکاری خزانے کو کڑوڑوں روپے نقصان کا انکشاف، سیکورٹی کے نام پر کروڑوں روپے اُڑائے گئے۔ ذرائع کے مطابق صدر کی وی آئی پی سکیورٹی، گورنر، وزیر اعلیٰ اور دیگر اعلیٰ سرکاری شخصیات کی پروٹوکول کے لئے انتظامی مشینری دو دنوں سے زیر استعمال ہے۔ ان تمام شخصیات کے دورے کا مقصد قراقرم یونیورسٹی کے 38طلبا اور طالبات میں لیب ٹاپ تقسیم کرنا ہے جن کی کل مالیت تقریبا 19 لاکھ بتائی جارہی ہے جوکہ صرف ایک تقریب کے لئے اُڑائے گئے ہیں۔ ذرائع کا دعوی ٰ ہے کہ صدر کے ساتھ 20 فیملی ممبرز کی سیکورٹی کے لئے چالیس سے زائد گاڑیاں سمیت آفیشلز کی سیکورٹی کے نام پر بلتستان جیسے پُرامن ماحول میں کڑوڑوں روپے ضائع کئے گئے ہیں۔ شنگریلا میں ان کے ایک دن قیام کا خر چہ 40 سے 50 لاکھ بتائی جاتی ہے جو کہ صرف ان کے لیپ ٹاپ تقسیم کے تقریب کے لئے خرچ کیے گئے۔ حکمران جماعت کے ذرائع کے مطابق صدر نے اس دورے کے دوران توانائی کے منصوبو ں بارے اجلاس طلب کی تھی جو کہ علاقے میں بجلی کے بحران پر قابو پانے میں سنگ میل ثابت ہوگا۔ دوسری جانب عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ صدر پاکستان کی سیکورٹی کے نام پر خرچ کئے گئے کروڑں کی مالیت سے گلگت سکردو روڈ کی تعمیر میں مدد مل سکتی تھی۔ صدر نے اپنے دورے اور خطاب میں گلگت سکردو روڈ بارے کوئی بات نہیں کی۔ جس سے علاقے کے عوام میں تشویش بڑھ گئی ہے۔ عوامی حلقوں کا کہنا ہے کہ حکمران جماعت کے گورنر، وزیر اعلیٰ حتی کہ بلتستان سے تعلق رکھنے والے ممبران اسمبلی موجود ہونے کے باجود انہیں گلگت سکردو روڈ بارے بات نہیں کی گئی۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s