ہماری آزادی | عبدالحمید

HAMEED 2.jpg
۔ 69 واں آ زادی ۔۔۔ ہر طرف پاکستان کے جھنڈے اوربیجز۔۔۔ سکولوں اور دوسرے تعلیمی اداروں میں تقریبات ۔۔۔ سرکاری اور نجی عمارتوں کو سجایا گیا۔۔۔ ہم نے آزادی ۸۶ سال پہلے حاصل کی جیسے ہمارے بچے جعلی ڈگریاں حاصل کرتے ہیں۔۔۔ یعنی بڑی محنت کے بعد۔
آزادی ہو یا جعلی ڈگری، ساری تگ دو تنِ تنہا کرنا پڑتا ہے۔۔۔
ٓبلتستان کی آزادی میں پاکستان نے ہماری مدد کی نہ کشمیر نے۔ کہ اُن کو اپنی اپنی پڑی ہوئی تھی ہماری فکر کہاں تھی۔
دراصل ہوا کچھ یوں تھا کہ ڈوگرہ حکمرانوں سے یہاں کے عوام بہت زیادہ تنگ تھے۔
کُڑتے رہتے تھے۔۔۔
جلتے رہتے تھے۔۔۔
لہذٰہ انتقام اور انقلاب کے جذبات اٹھے۔۔۔
اور فوراََ اپنے حاکم بدل لئے ۔۔۔
ویسے بھی آزادی لینے اور دینے کے معاملے میں ہم بڑے فراخ دل نکلے ہیں۔
آزادی ڈوگروں سے لے کر پاکستان کے جھولی میں غیر مشروط ڈال دی۔۔
اب ستر سال ہونے کو ہے مگر یہ لفظ ”غیر مشروط“ کسی کی سمجھ نہیں آتا۔۔۔
ڈکشنریاں چھان لیںگئیں۔۔۔
تاریخ پڑھ ڈالی۔۔۔
بزرگوں سے استفادہ کیاگیا۔۔۔
اقوام متحدہ سے مدد لی گئی۔۔۔
پاکستان کے عدالتوں سے پوچھاگیا۔۔۔
آج تک کوئی کامیابی نہیں ہوئی۔۔۔
میرے خیال سے۸۶ سالوں تک گلگت بلتستان کے قوم کو سمجھ آنی چاہیے تھی۔۔۔
کہتے ہیں بلتستان میں پہلے مقپون راجوں کی حکومت تھی۔۔۔
اب جمہوریت ہے کہ جو اسلام آباد میں حکومت بنا لے وہی بلتستان میں بھی کر لیتے ہیں چاہے کتنا بھی بڑے سے بڑا ہیرا پھیری کرنا پڑے۔
کہتے ہیں کچھ دیر جیالوں کی بھی حکومت رہی۔۔۔

اس دوران اس علاقے کی درامدات اور برآمدات میں بہت اضافہ ہوا۔
ہارس ٹریڈیگ، کرپشن، اقرباءپروری اور اشرافیہ طریق درآمد کئے گئے۔۔۔وزیر اعلیٰ کے لئے وی ۔آئی۔پی پروٹوکول اس کے علاوہ ہیں۔
اور اہم برآمدات میں غیر ملکی دورے شامل تھے۔
ہماری بلتی زبان
اگلے لوگوں سے سنا ہے کہ بلتی زبان ہے ۔
کمال ہے میں بچپن سے بولتا آرہا ہوں مجھے کبھی نہیں لگا۔۔۔
ہاں جب بھی کوئی بلتی میں گالی دیتا تو مجھے شک ضرور پڑتا کہ یہ بھی کچھ ہے۔
بہرحال بلتی کو زبان کس نے بنایا اس کا آج تک پتا نہیں چلا۔۔
ورنہ پتا چلتا کہ بلتی اور اس کے زبان کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے والوں کا کیا حال ہوتاہے۔۔۔
دہشت گردی کے مقدمات لگ جاتے ہیں۔۔۔
بغاوت کے دفعے لگتے ہیں۔۔۔
جیلوں میں سڑتے ہیں۔۔۔
اور بلا آخر کراچی میں کینسر کا علاج کرواتے اوراسی بیماری سے چل بستے ہیں۔۔۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s