غذرکو دہشتگردی سے بچایاجائے،اسمبلی میں قراردادمنظور

Gilgit-Baltistan-map.png

گلگت((نمائندہ خصوصی) گلگت بلتستان قانون ساز اسمبلی نے ایک قرارداد متفقہ طور پر منظور کی ہے جس میں کہاگیا ہے کہ گلگت بلتستان حکومت اپنے سرحدی حدود کی حفاظت اور دہشتگردی کو روکنے کے لےے شندور سمیت ضلع غذر کے دیگر حساس نالہ جات میں جی بی سکاﺅٹس کو تعینات کر کے ضلع غذرکو دہشتگردی کے خطرے سے بچاےا جائے۔ پارلیمانی سیکرٹری برائے ترقیات و منصوبہ بندی فدا خان نے قرارداد اےوان میں پیش کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ وقت میں ضلع غذر کو دہشتگردوںنے تھرٹ کیا ہے چونکہ ضلع غذر کے بہت سارے نالہ جات حساس ہیں پچھلے دنوںدہشت گردوںکی طرف سے گوپس خاص میں دھرا قتل اور چھشی نالہ میں پولیس سے ہتھیار چھین کر لے جانا دہشتگردوںکی دہشتگردی کا منہ بولتا ثبوت ہے دہشت گردوںمیں سے کچھ کی گرفتاری حکومت گلگت بلتستان کی دہشت گردی پر کنٹرول کا مستحسن اقدام ہے مفرور دہشت گردوںکی تلاش حکومت گلگت بلتستان کی طرف سے جاری ہے ضلع غذر کے نالہ جات سوات،دیامر اور چترال سے ملتے ہیں ۔شندور گلگت بلتستان کے مغربی جانب خیبر پختونخواہ سے ملتا ہے کے پی کے کی طرف سے بدستور شندور (جو گلگت بلتستان کا حصہ ہے) پر آئے روز تجاوزات کا سلسلہ جاری ہے۔افسوس ناک امر ےہ ہے کہ آج سے قبل گلگت بلتستان کی سابقہ حکومت کی طرف سے کوئی موثر کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی جس طرح شندور میں چترال سکاﺅٹس اپنے حدود کی حفاظت کے لےے تعینات ہے اسی طرح گلگت بلتستان کی حکومت بھی اپنے حدود کی حفاظت اور دہشتگردی کو روکنے کے لےے شندور سمیت ضلع غذر کے دیگر حساس نالہ جات میںگلگت سکاﺅٹس کو تعینات کر کے ضلع غذرکو دہشتگردی کے خطرے سے بچاےا جائے۔ قراردادکی کسی رکن نے مخالفت نہیں کی جس پرڈپٹی سپیکر قانون ساز اسمبلی نے قرارداد کی منظوری کا اعلان کیا ۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s